آج امام حسن عسکری علیہ السلام کی مظلومانہ شہادت کا دن ہے۔ آپ کی عمر مبارک ۲۸ سال ہے اور ان  ۲۸ سال آپ نےقید میں زندگی بسر کی اور اس دوران  معتمد عباسی نے امام علیہ السلام کو بے انتہاء اذیتیں دیں۔

امام عسکری اور انکے والد ماجد  امام علی نقی علیہا السلام کو  امامین عسکریین کے نام سے بھی جاناجاتا ہے۔اس لقب کی وجہ یہ ہے کہ آپکو اس  وقت  کےحاکموں نے  سامراء  میں فوج کے چھاونی میں قید کر رکھا تھا اور اسی وجہ سے آپ کا رابطہ  شیعوں سے بہت محدود تھا اور فقط خاص وکلاء کے ذریعہ پیغامات ردّ و بدل ہوتے تھے۔

▪️آخر کار معتمد نے امام عسکری علیہ الاسلام کو ۸ربیع الاول۲۶۰ ہجری قمری میں  زہر دے کر  شہید کروا دیا۔

 

◾️امام حسن عسکری علیہ السلام کی کرامت

 ابو ہاشم نقل کرتے ہیں کہ میں فقر و فاقہ کے دور سے گزر رہا تھا اور میں نے چاہا کہ  امام ابو محمد علیہ السلام سے مدد طلب کروں لیکن مجھے مانگتے ہوئے شرم آئی اور میں واپس آگیا۔ گھر آکر معلوم ہوا کہ امام عسکری علیہ السلام نے  سو دینار بھجوائے ہیں اورساتھ میں ایک خط ہے کہ جس میں لکھا ہے کہ : جب بھی تمکو ضرورت ہو ہم سے مانگنے میں شرم نہ کرنا کیونکہ ہم حاجت روائی کریں گے۔

قالَ الإمامُ الْحَسَنِ الْعَسْکَری علیه‌السلام : مَنْ لَمْ یَتَّقِ وُجُوهَ النّاسِ لَمْ یَتَّقِ اللهَ، جو لوگوں کا احترام اور انکے حقوق کی رعایت نہیں کرسکتا وہ تقوای الہی کا پابند بھی نہیں ہو سکتا۔ ( بحارالأنوار، ج ۶۸، ص ۳۳۶)

 

امام صادق علیہ السلام آنلائن مدرسہ حضرت امام حسن عسکری علیہ السلام کی شہادت کی مناسبت پر تمام عالم اسلام کی خدمت میں تعزیت پیش کرتا ہے۔