🔰  ماہ ربیع الأول کی ۱۷ تاریخ میں دو اہم مناسبتیں ہیں پہلی مناسبت  ولادت باسعادت ختمی مرتبت  حضرت محمد مصطفیﷺ  ہے اور دوسری مناسبت ہمارے  چھٹے امام حضرت جعفر الصادق علیہ السلام کی ولادت ہے۔

 شیعوں کے چھٹےامام  جعفر بن محمد کہ جنکو جعفر الصادق علیہ السلام کے نام سےجانا جاتا ہے ۱۷ ربیع الاول سن  ۸۳ ھ ق کو شہر  مدینہ میں پیدا ہوئے۔ آپ کے والد ماجد  امام محمد باقر علیہ السلام ہیں اور آپ کی والدہ ماجدہ  حضرت امّ فروہ ہیں۔

 

🔸 شاگردوں کی تربیت

آپ نے ۳۴ سال شیعوں کی زعامت اور  امامت کے فرائض انجام دئے اور اس مدت میں ۴۰۰۰ (چار ہزار) شاگردوں کی تربیت کی۔یہی وجہ ہے کہ اکثر روایات امام جعفر الصادق علیہ السلام سے نقل ہوئی ہیں اور مذہب شیعہ اثنی عشری کو  مذہب جعفری بھی کہتے ہیں۔

نہ فقط علماء شیعہ بلکہ علماء اہل تسنن بھی امام صادق علیہ السلام کے علم و فضل کے قائل ہیں ۔  ابو حنیفہ اور  مالک بن انس نے کثیر تعداد میں امام علیہ السلام سے روایات نقل کی ہیں۔

 

🔸 امام صادق علیہ السلام کا معجزہ

ایک دن منصور دوانقی نے ۷۰ جادوگروں کو جمع کیا تاکہ امام علیہ السلام کوحیران کر سکے۔ جادوگروں نے شیروں کی تصویریں بنائیں تاکہ دیکھنے والے سحرزدہ ہو جائیں۔ امام صادق علیہ السلام جب اس جگہ تشریف لائے تو ایک نگاہ ان تصویروں پر ڈالی اور کوئی ذکر پڑھااور حکم دیا اے شیروں ان جادو گروں کو نگل جاؤ، امام علیہ السلام کا حکم ہونا تھا کہ تصویروں سے شیر زندہ ہو کر نکلنے لگے اور جادوگروں کو نگل گئے۔ یہ ماجرا دیکھ کہ منصور اپنے تخت سے زمین پر گر کر بے ہوش ہو گیا اور ہوش میں  آتے ہی امام علیہ سے درخواست کرنے لگا کہ ہم کو معاف کر دیجئے۔

 🌸 علمی مناظرے

امام صادق علیہ السلام کے ساتھ مختلف ادیان اور مذاہب کے رہنماؤوں نے کثیر تعداد میں مناظرے کئے ہیں کہ جنکو تاریخ میں ذکر کیا گیا ہے۔یہ مناظرے اکثر اوقات خود امام علیہ السلام کے ساتھ ہوئے ہیں اور بعض اوقات امام کی موجودگی میں انکے شاگردوں نے انجام دئے ہیں۔امام صادق علیہ السلام  نے اپنے بعض شاگروں کو  مختلف علوم اور فنون میں خاص مہارت کے درجہ تک پہنچایا اور آپ کے شاگردجیسے  حمران بن اعین کو قرآن کے مباحث میں خاص مہارت حاصل تھی،  ابان بن تغلب کو ادبیات عرب  میں ،  زرارہ کو علم فقہ میں اور  مومن طاق اور  ہشام بن سالم کو علم کلام میں خاص مہارت حاصل تھی۔

امام صادق علیہ السلام آنلائن مدرسہ اس پر مسرت موقع پر تمام عالم اسلام کی خدمت میں ہدیہ تبریک و تہنیت پیش کرتا ہے۔